عالمی برادری خطے میں ایرانی مداخلتوں پر روک لگائے: سعودی عرب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ مشرق وسطی کے ممالک بالخصوص یمن کے امور میں ایرانی مداخلتوں پر روک لگائی جائے۔ الجبیر کا یہ مطالبہ نیویارک میں اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل آنتونیو گوترس کے ساتھ ان کی ملاقات کے دوران سامنے آیا۔

الجبیر کا کہنا تھا کہ تہران کی جانب سے باغیوں کو اسلحہ فراہم کرنا عالمی سلامتی کونسل کی قرار دادوں کی کھلی خلاف ورزی ہے۔

نیویارک روانگی سے قبل عادل الجبیر نے واشنگٹن میں نئی امریکی انتظامیہ کے کئی سینئر عہدے داروں سے ملاقات کی جس کے دوران خطے کو درپیش چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے لیے تعاون کی راہ پر بات چیت ہوئی۔

یاد رہے کہ متحدہ عرب امارات کی وزارت خارجہ نے جمعرات کے روز ابو ظبی میں ایرانی سفارت خانے کے ناظم الامور کو طلب کر کے ایک احتجاجی یادداشت حوالے کی۔ یادداشت میں باور کرایا گیا ہے کہ ایران کا یمن میں باغیوں کو غیر قانونی طریقے سے ہتھیار فراہم کرنا سلامتی کونسل کی قرار دادوں کی خلاف ورزی ہے جو اس عمل کو ممنوع قرار دیتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں