امریکی ویزا طلب کرنے والوں سے ان کے پاس ورڈ پوچھے جا سکتے ہیں !

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی داخلہ سکیورٹی کے وزیر جان کیلی کا کہنا ہے کہ امریکی سفارت خانے مستقبل میں امریکی ویزوں کے درخواست گزاروں سے ان کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس کے پاس ورڈ طلب کر سکتے ہیں تاکہ ان افراد کے پس منظر کے بارے میں تحقیقات کو یقینی بنایا جا سکے۔

کیلی کے مطابق یہ کارروائی ایسے افراد کے انکشاف کے واسطے کی جا سکتی ہے جن کا سکیورٹی کے حوالے سے خطرہ بننے کا امکان ہو۔

امریکی وزیر نے واضح کیا کہ یہ معاملہ ان امور میں سے ہے جو ابھی زیر بحث ہیں بالخصوص ان سات ممالک کے مسافروں کے واسطے جن پر صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پابندی عائد کی ہے۔

ایوان نمائندگان میں داخلہ امن کی کمیٹی کے خصوصی اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے جان کیلی کا کہنا تھا کہ " ان سات ملکوں سے تعلق رکھنے والوں کے بارے میں تفتیش کرنا یقینی طور پر انتہائی دشوار ہے۔ تاہم یہاں آنے کی صورت میں ہم ان سے پوچھ سکتے ہیں کہ وہ کون سی ویب سائٹوں کا استعمال کرتے ہیں اور وہ ہمیں اپنا پاس ورڈ بتائیں تاکہ ہم جان سکیں کہ یہ لوگ انٹرنیٹ پر کیا کرتے ہیں.. اگر ان لوگوں نے ہمارے ساتھ تعاون سے انکار کیا تو وہ امریکا میں ہر گز داخل نہیں ہوں گے"۔

جان کیلی نے زور دے کر کہا کہ اس حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے تاہم باریک بینی کے ساتھ آخری حد تک تفتیش مستقبل میں حتمی اقدام ہوگا۔ خواہ اس کا مطلب امریکی ویزوں کے اجراء میں تاخیر ہی کیوں نہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ " ہم ان لوگوں سے اس نوعیت کی معلومات کے بارے میں پوچھ سکتے ہیں اور اگر وہ واقعتا امریکا آنا چاہتے ہوں گے تو وہ تعاون کریں گے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں