مصر: حسنی مبارک کے خلاف سماعت ، کورٹ آف کسیشن کی منتقلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر میں کورٹ آف کسیشن نے سابق صدر حسنی مبارک کے خلاف مقدمے کی سماعت قاہرہ کے وسط میں واقع اپنے صدر دفتر سے منتقل کرنے کی منظوری دے دی ہے جو کورٹ کی تاریخ میں اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے۔ سابق صدر کے خلاف مظاہرین کے قتل سے متعلق دائر مقدمے کی سماعت اب 2 مارچ کو قاہرہ کے مشرق میں فِفتھ سیٹلمنٹ نامی علاقے میں واقع پولیس اکیڈمی کے اندر ہو گی۔

اس سے قبل وزارت انصاف کی منظوری کے باوجود کورٹ آف کسیشن سال بھر تک اپنے صدر دفتر سے منتقلی کو مسترد کرتی رہی تھی۔ جمعرات کے روز جاری نوٹس میں کورٹ نے اپنے نئے فیصلے سے آگاہ کرتے ہوئے تمام متعلقہ اداروں کو ضروری اقدامات کرنے اور سابق صدر حسنی مبارک کو صبح نو بجے تک عدالت میں پہنچانے کی ہدایت کی ہے۔

یاد رہے کہ محفوظ اور آزاد مقام کی فراہمی تک عدالت مقدمے کی سماعت کو ملتوی کر رہی تھی۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ مصری وزارت داخلہ کا مسلسل اصرار تھا کہ حسنی مبارک کو سکیورٹی وجوہات کے پیش نظر سماعت کے واسطے قاہرہ کے وسط میں کورٹ کے صدر دفتر منتقل کرنا دشوار گزار عمل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں