دوریاستی حل کے حامی فلسطینی ریاست کو تسلیم کریں:محمود عباس

بیت المقدس کے بغیر فلسطینی مملکت کا کوئی تصور نہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ محمود عباس نے کہا ہے کہ فلسطین۔اسرائیل تنازع کے دو ریاستی حل کے حامی ممالک فلسطینی ریاست کو باضابطہ طور پرتسلیم کریں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جنیوا میں انسانی حقوق کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جوممالک ۔ فلسطین، اسرائیل تنازع کے دو ریاستی حل پر یقین رکھتے ہیں وہ فلسطینی مملکت کو تسلیم کریں۔

محمود عباس نے خبردارکیا کہ فلسطین میں اسرائیلی قبضے کو مستقل کرنے ،یہودی آباد کاری میں توسیع، فلسطین میں مقدس مقامات کی بے حرمتی پر عالمی برادری کی خاموشی اور امریکی سفارت خانے کی بیت المقدس منتقلی کے اعلانات تنازع فلسطین کے حل کی راہ میں رکاوٹ ہیں۔
صدر محمود عباس نے کہا کہ مشرقی بیت المقدس مقبوضہ علاقہ ہےجس پر اسرائیل نے ناجائز اور غیرقانی طور پرقبضہ جما رکھا ہے۔ یہ فلسطینی ریاست کا دارالحکومت ہے اور اسے صہیونی ریاست میں مستقل طور پر شامل کرنے کے نتیجے میں مشرق وسطیٰ میں قیام امن کی مساعی بری طرح متاثر ہوسکتی ہیں۔ بیت المقدس کے بغیرآزاد ریاست کا کوئی تصور نہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں