.

یمن : امریکی ڈرون حملوں میں القاعدہ کے 7 ارکان ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں "العربیہ" کے ذرائع نے بتایا ہے کہ جمعرات کے روز دو مختلف ڈرون حملوں میں القاعدہ کے 7 ارکان ہلاک ہو گئے۔

ذرائع کے مطابق پہلے حملے میں شبوہ صوبے کے ضلع الصعید میں ایک گھر کے سامنے القاعدہ کے 4 ارکان کو نشانہ بنا کر موت کی نیند سلا دیا گیا۔

دوسری کارروائی میں البیضاء صوبے کے شمال میں واقع قیفہ کے علاقے میں القاعدہ تنظیم کے ایک ٹھکانے پر بم باری کی گئی جس کے نتیجے میں تنظیم کے 3 ارکان مارے گئے۔

البیضاء صوبے میں ہی مقامی ذرائع نے بتایا ہے کہ صوبے کے جنوبی ضلع الصومعہ میں واقع گاؤں جاعر کو بھی مبینہ طور پر امریکی طیاروں نے بم باری کا نشانہ بنایا۔ کارروائی کا ہدف القاعدہ تنظیم کے ٹھکانے تھے۔

یمن کے جنوبی صوبے اَبین میں قبائلی ذرائع نے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ جمعرات کی صبح جرت کے علاقے میں واقع وادی موجان میں فوجی اہل کاروں کو فضا سے زمین پر اتارنے کی کارروائی دیکھنے میں آئی۔ یہ علاقہ یمن میں القاعدہ کے قدیم ترین گڑھ المراقشہ کے پہاڑوں سے قریب ہے۔

عینی شاہدین کے مطابق فوجیوں کے اتارے جانے کی کارروائی کے دوران امریکی بحری جہازوں اور لڑاکا طیاروں کی جانب سے شدید بم باری بھی کی گئی۔ کارروائی میں وادی میں القاعدہ تنظیم کے ارکان کی روپوشی کے مقامات کو نشانہ بنایا گیا۔