.

یمنی فوج کے حملے میں حوثیوں کا اہم کمانڈر چارساتھیوں سمیت ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے سرکاری ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ شمال مغربی تعز گورنری کے شمالی قصبے مقبنۃ میں حکومت نواز فورسز کی گولہ باری کے نتیجے میں ایران نواز حوثی لیڈر عصام مھیوب البرعی اپنے چار ساتھیوں سمیت ہلاک ہوگیا۔

یمن کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ’سبا‘ کے مطابق گذشتہ روز شمال مغربی تعز میں حکومتی فورسز نے حوثی باغیوں کے ایک مرکز کو توپخانے سے نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں حوثی کمانڈر البرعی اپنے چار ساتھیوں سمیت ہلاک ہوگیا۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق ساحلی شہر المخا کے شمالی علاقوں میں بھی حکومتی فورسز نے اہم پیش قدمی کرتے ہوئے الزھاری اور الرویس کے علاقوں سے باغیوں کو باہر نکال دیا ہے۔ اس کے علاوہ الحدیدہ شہر کے جنوبی ڈاریکٹوریٹ الخوخہ میں بھی باغیوں کو شکست دی گئی ہے۔

ادھر المخاء کے مقام پر عرب اتحادی طیاروں نے باغیوں کو لے جانے والی ایک گاڑی کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں باغیوں کو جانی اور مالی نقصان پہنچا ہے۔ اس کے علاوہ تعز کے مغربی علاقے موزع میں باغیوں کے راکٹ لانچنگ اڈے سمیت پانچ مقامات پر فضائی حملے کیے گئے ہیں۔