.

عوض القرنی پر ایک لاکھ ریال جرمانہ اور ٹوئیٹر اکاؤنٹ کی بندش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں خصوصی فوج داری عدالت نے معروف مبلغ عوض القرنی کے خلاف ایک لاکھ ریال جرمانے کا ابتدائی حکم جاری کیا ہے۔ اس کے علاوہ ٹوئیٹر پر اُن کے اکاؤنٹ کی بندش کے ساتھ القرنی کو کسی بھی نوعیت کی ٹوئیٹ سے روک دیا گیا ہے۔

یہ پیش رفت القرنی کی جانب سے ٹوئیٹر پر ایسا مواد پوسٹ کرنے کے ثابت ہونے کے بعد سامنے آئی ہے جو مملکت کے عام نظام کے لیے ضرر رساں شمار کیا گیا۔ عدالت کے مطابق القرنی کی ٹوئیٹس معاشرے کے اپنی قیادت کے ساتھ تعلق اور مملکت کے دیگر ممالک کے ساتھ تعلقات پر اثر انداز ہونے والی ہیں۔

عوض القرنی کے مطابق انہوں نے ریاض میں خصوصی فوج داری عدالت کے اُس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کر دی ہے جس میں القرنی پر ایک لاکھ ریال جرمانہ عائد کیے جانے کے علاوہ ان کے ٹوئیٹر اکاؤنٹ کی بندش کا حکم جاری کیا گیا۔

عوض القرنی نے اپنی ٹوئیٹ میں بتایا کہ عدالت نے استغاثہ کی جانب سے القرنی پر دس لاکھ ریال جرمانے کا مطالبہ مسترد کر کے ایک لاکھ ریال پر اکتفا کیا۔ اس کے علاوہ عدالت نے القرنی پر سفر کی پابندی عائد کرنے کا مطالبہ بھی مسترد کر دیا۔