.

مصری صدر حسنی مبارک انقلاب کے بعد پہلی مرتبہ رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر میں حکام نے جمعے کے روز سابق صدر حسنی مبارک کو رہا کر دیا جس کے بعد وہ قاہرہ کے جنوب میں المعادی کے علاقے میں واقع مسلح افواج کے ہسپتال سے کوچ کر کے قاہرہ کے مضافات میں اپنے گھر چلے گئے۔ حسنی مبارک چھ برس کے دوران پہلی مرتبہ رہا کیے گئے ہیں۔

اس سے قبل رواں ماہ مصر میں کورٹ آف کسیشن نے مبارک کو جنوری 2011 کی انقلابی تحریک کے دوران مظاہرین کے قتل کے الزام سے بری قرار دیا تھا۔ وہ 30 برس تک مصر میں اقتدار پر براجمان رہے۔

حسنی مبارک کو اپریل 2011 میں گرفتار کرنے کے بعد ایک سے زیادہ مقدمات میں عدالت میں پیش کیا گیا۔ مبارک کو ان کے دونوں بیٹوں علاء اور جمال کے ساتھ بدعنوانی کے ایک مقدمے میں تین برس قید کی سزا بھی دی گئی۔

حسنی مبارک کو ابھی تک مصری صحافتی گروپ الاہرام سے مبینہ طور پر موصول تحائف کے مقدمے میں بدعنوانی کے الزامات کا سامنا ہے۔