.

"امریکا مردہ باد "کے نعرے میں کوئی حقیقت نہیں : حوثی اسیر کا اعتراف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں حوثی باغیوں کے ایک کمانڈر نے اس امر کا اعتراف کیا ہے کہ حوثی اور معزول صالح کی ملیشیائیں انسانی بنیادوں پر آنے والی امداد کو جنگ میں اپنے محاذوں کو سپورٹ کرنے کے واسطے استعمال کر رہی ہیں۔ یہ اعترافی بیان صنعاء کے مشرق میں پہاڑی علاقے سے گرفتار ہونے والے حوثی کمانڈر محمد الہجرہ کی جانب سے سامنے آیا ہے۔ مذکوہ علاقے پر یمنی فوج کے کنٹرول کے بعد باغی ملیشیاؤں کی عسکری نقل و حرکت کو مزید آسانی سے نشانہ بنایا جا سکتا ہے۔

الہجرہ نے اس بات کو بھی تسلیم کیا کہ "امریکا مردہ باد" کے نعرے میں کوئی حقیقت نہیں ہے اور یہ کہ "ہم امریکا کے نہیں بلکہ مسلمانوں کے خلاف لڑ رہے ہیں"۔

صنعاء صوبے کے ضلع نہم میں ہونے والے معرکوں میں درجنوں کمانڈروں کے مارے جانے کے بعد حوثی ملیشیاؤں میں نگراں کی سطح کے عناصر کی لڑائی میں شرکت خال خال ہی نظر آتی ہے جو کہ کمانڈروں کی شدید قلت کا پتہ دیتی ہے۔