.

’نوری المالکی نے عراق کے شہر داعش کے حوالے کیے‘

المالکی موجودہ بحرانوں کےذمہ دار ہیں:مندوب مقتدیٰ الصدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے سرکردہ شیعہ رہ نما مقتدیٰ الصدر کے مندوب نے الزام عاید کیا ہے کہ سابق وزیراعظم نوری المالکی نے ملک کے بڑے شہر خود ہی دہشت گرد تنظیم ’داعش‘ کے حوالے کیے۔ ان کا کہنا ہے کہ ملک آج جن بحرانوں کا سامنا کررہا ہے یہ سب نور المالکی کے پیدا کردہ ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مقتدیٰ الصدر کے مندوب ابراہیم الجابری نے ان خیالات کا اظہار ہفتہ وار احتجاجی مظاہرے سے خطاب میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ نوری المالکی عراق کے اضلاع داعش کے حوالے نہ کرتے تو آج ہم ایک نئی جنگ نہ لڑ رہے ہوتے۔ نوری المالکی عراقی عوام کی مشکلات میں ایک فی صد بھی کمی نہیں کرسکے۔ وہ خود عراقی عوام کے لیے مسائل اور مصائب کا سبب تھے۔ سبائیکر فوجی اڈے پر دہشت گردوں کا حملہ اور سیکڑوں فوجیوں کے قتل عام کا سبب المالکی تھے جن کی بزدلانہ پالیسیوں نے سیکیورٹی اداروں کو مشکلات سے دوچار کیا۔

سابق وزیراعظم المالکی پر تنقید کرتے ہوئے ابراہیم الجابری نے کہا کہ نیشنل الائنس کے سربراہ، الدعوۃ پارٹی کے صدر اور پارلیمنٹ کے رکن ہونے کے باوجود المالکی عوام کے لیے کچھ نہیں کرسکے۔ وہ کچھ کربھی نہیں سکتے تھے کیونکہ وہ خود عراقی عوام کے لیے تباہی کا سامان پیدا کررہے تھے۔