.

یادوں کا دریچہ : 40 برس قبل شیخ محمد کے ہائی جیکروں سے مذاکرات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دبئی کے حکم راں شیخ محمد بن راشد آل مکتوم اپنی ہمہ جہت شخصیت کی وجہ سے جانے جاتے ہیں۔ تاہم لوگوں کی ایک بڑی تعداد کے لیے غالبا یہ نئی معلومات ہوگی کہ تقریبا 40 برس قبل وہ جرمنی کے اغوا شدہ طیارے کو آزاد کرانے کے لیے ہونے والے "پیچیدہ" نوعیت کے مذاکرات میں براہ راست شریک رہے۔ اس حوالے سے "حمدان بن محمد مرکز برائے تجدیدِ ورثہ" کی جانب سے چند روز قبل سابقہ مغربی جرمنی کے طیارے کے اغوا کے واقعے کا وڈیو کلپ جاری کیا گیا جس کو 16 اکتوبر 1977 کو دبئی کے ہوائی اڈے پر اتار لیا گیا تھا۔

وڈیو کلپ میں متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور وزیر اعظم شیخ محمد ایئر کنٹرول ٹاور میں طیارہ اغوا کرنے والے ہائی جیکروں کے ساتھ مذاکرات کرتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔

شیخ محمد ہائی جیکروں کے ساتھ مذاکرات میں کامیاب ہو گئے اور یہ واقعہ بنا کسی نقصان کے اختتام پذیر ہو گیا۔

یاد رہے کہ دبئی کے ولی عہد شیخ حمدان بن راشد آل مکتوم نے اپریل 2013 میں "حمدان بن محمد مرکز برائے تجدیدِ ورثہ" کے قیام سے متعلق فیصلہ جاری کیا تھا۔

اس مرکز کے خصوصی منصوبے "وثيقتی" کے تحت آرکائیو شدہ متعدد دستاویزات اور وڈیوز کو منظر عام پر لایا جا رہا ہے تاکہ امارات کی تاریخ اور ورثے سے متعلق آگاہی کو پھیلایا جائے۔

یاد رہے کہ اکتوبر 1977 میں Lufthansa فضائی کمپنی کے بوئنگ 737 طیارے کو چار فلسطینیوں نے اغوا کیا تھا۔ پرواز نمبر 181 میں 87 مسافر سوار تھے۔ اُس وقت یہ بات بھی سامنے آئی تھی کہ ہائی جیکنگ کی مذکورہ منصوبہ بندی ودیع حداد نے کی تھی جو "عوامی محاذ برائے آزادی فلسطین" تنظیم کا رہ نما تھا۔