.

کویتی اور ایرانی تاجروں کےمشتبہ قاتل سربیا میں گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سربیا کے حکام نے دو مشتبہ افراد کو حراست میں لیا ہے جن پر ایرانی اور کویتی تاجروں کو قتل کرنے کا شبہ ظاہر کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ترک ذرائع ابلاغ میں آنے والی اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ سربیا کی پولیس نے فارسی میں نشریات پیش کرنے والے ’جم‘ ٹیلی ویژن نیٹ ورک کے ڈائریکٹر سعید کریمیان اور اس کے کویتی ساتھی محمد متعب الشلاحی کے مبینہ قتل میں ملوث دو افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔ ان پر الزام ہے کہ انہوں نے گذشتہ ماہ استنبول میں فائرنگ کرکے ان دونوں کو قتل کردیا تھا۔

خیال رہے کہ مقتول ایرانی کاروباری شخصیت کا تعلق ایرانی اپوزیشن سے بتایا جاتا ہے۔

ترک اخبار’ملیت‘ کے مطابق سربیا کے حکام نے حراست میں لیے گئے دونوں ملزمان کے ایرانی انٹیلی جنس روابط کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔ دونوں ملزمان کو جعلی پاسپورٹ پر جبل الاسود کی جانب جاتے ہوئے حراست میں لیا گیا۔

فارسی میں نشریات پیش کرنے والے ریڈیو نے کریمیان کے اہل خانہ کے ایک ذریعے کے حوالے سے بتایا ہے کہ حراست میں لیے گئے دونوں مشتبہ ملزمان کو ترکی کے حوالے کردیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزمان کی گرفتاری ترکی کے تعاون سے عمل میں لائی گئی ہے۔

خیال رہے کہ ایران کی ایک انقلاب عدالت نے سعید کریمیان پر اس کی عدم موجودگی میں چھ سال قید کی سزا سنائی تھی۔

کریمیان اور اس کے کویتی ساتھی متعب الشلاحی کو نامعلوم افراد نے 29 اپریل ہفتے کے روز استنبول میں گولیاں مار کر قتل کردیا تھا۔ ایرانی اپوزیشن نے کریمیان اور اس کے ساتھی کے قتل کی ذمہ داری ایرانی انٹیلی جنس اداروں پر عاید کی ہے۔