سیف الاسلام قذافی رہائی کے بعد زنتان شہرسے مشرقی لیبیا روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

لیبیا کے سابق مرد آہن مقتول معمر قذافی کے سب بڑےبیٹے سیف الاسلام قذافی کو جیل سےرہا کردیا گیا ہے جس کے بعد وہ زنتان شہر سے مشرقی لیبیا کی جانب روانہ ہوگئے ہیں۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کو سیف الاسلام قذافی کے ایک مقرب ذریعے نے بتایا کہ سیف الاسلام زنتان شہر میں قائم جیل سے رہائی کےبعد مشرقی لیبیا روانہ ہوگئے ہیں۔

ذرائع کاکہنا ہے کہ حکومت کی اجازت اور عدالت کےحکم پر سیف الاسلام کو رہا کیا گیا ہے۔ اب انہیں البیضاء شہر میں اپنے اقارب کے ساتھ رہنے کی اجازت دی گئی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ توقع ہے کہ سیف الاسلام قذافی جلد ہی مناسب موقع دیکھتے ہوئے اپنے حامیوں سے خطاب بھی کریں گے۔

ذرائع کے مطابق البیضاء شہر کے قبائلی عمائدین نے رہائی کے بعد سیف الاسلام کی میزبانی کی پیش کش کی تھی۔اس سے قبل قبائل کی نمائندہ حکماء کونسل معمر قذافی کی بیوہ اور سیف الاسلام کی والدہ صفیہ فرکاش کو بھی میزبانی کی پیش کش کی تھی تاہم انہوں نے یہ پیش کش مسترد کرتے ہوئے اپنےبیٹے کے ہمراہ بیرون ملک رہنے کا فیصلہ کیا تھا۔

خیال رہے کہ سیف الاسلام کو سنہ 2011ء میں زنتان جیل میں ڈالا گیا تھا۔ حال ہی میں پارلیمنٹ کی جانب سے عام معافی کے اعلان کے بعد سیف الاسلام کو بھی رہا کرنے کا اعلان کیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں