.

عراق میں سیاسی مداخلت کے لیے قطر پر منی لانڈرنگ کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی حکومت کےایک ذمہ دار ذریعے نے انکشاف کیا ہے کہ قطری حکومت کرد سیاسی رہ نماؤں اوراپنے مقرب ارکان پارلیمان کی سیاسی معاونت کے لیے مواصلاتی کمپنی کے توسط سے منی لانڈرنگ میں ملوث رہا ہے۔

العربیہ کے مطابق عراقی حکومت کے عہدیدار نے بتایا کہ ٹیلی کمیونیکیشن کمپنی پر کرپشن میں ملوث ہونے کے ساتھ ساتھ ٹیکسوں کی ادائی سے بھی راہ فرار اختیار کررہی ہے۔

مذموکورہ کمپنی کے 65 فی صد حصص قطری حکومت کے پاس ہیں۔ یہ اطلاعات آئی ہیں کہ عراقی حکام نے کمپنی کی بھاری رقوم قبضے میں لی ہے تاکہ اس رقم سے ٹیکس کی رقم منہا کی جاسکے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ قطر اپنے ایجنٹوں کی مدد کی مدد کے لیے عراق میں ٹیلی کمیونیکیشن کمپنی کے کردار کو فعال بنانے کے لیے کوشاں رہا ہے۔

مذکورہ کمپنی پر غیرقانونی طریقے سے رقوم کی منتقلی کے علاوہ کئی دوسرے کارخانوں اور کمپنیوں پر بھی منی لانڈرنگ میں ملوث ہونے کے الزامات ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ منی لانڈرنگ کا یہ غیرقانونی حربہ سلیمانیہ ہوائی اڈے کے راستے استعمال کیا جاتا رہا ہے۔