اسد رجیم امدادی آپریشن کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کررہا ہے:یو این

جنگ سے متاثرہ علاقوں میں 5 لاکھ افراد محصور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اقوام متحدہ نے شامی حکومت پر جنگ سے متاثرہ شہریوں تک امداد کی رسائی کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کرنے کا الزام عاید کرتے ہوئے دمشق کی پالیسیوں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری برائے انسانی امور اسٹیفن اوپرائن نے سلامتی کونسل کے اجلا س میں پیش کی گئی رپورٹ میں کہا کہ اسد رجیم جنگ سے متاثرہ شہریوں تک امداد کی فراہمی میں دانستہ طور پررکاوٹیں کھڑی کررہی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ شام میں جنگ سے تباہ ہونے والے علاقوں میں موجود شہریوں تک امدادی قافلوں کے پہنچنے میں تاخیر کی وجہ شامی فوج کی طرف سے کھڑی کی گئی رکاوٹیں اور مسلسل بمباری ہے۔ جنگ زدہ علاقوں میں پائی جانے والی کشیدگی کے باعث دن یا رات کے اوقات میں امدادی قافلوں کو روانہ کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔

اقوام متحدہ کے عہدیدار نے شام کے مختلف شہروں میں محصور پانچ لاکھ شہریوں تک امداد کی فوری فراہمی کو یقینی بنانے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ الرقہ شہر میں داعش کی وجہ سے حالات کافی کشیدہ ہیں۔ اسی طرح درعا میں بھی بڑی تعداد میں شہری امداد کے منتظر ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں