.

عرب اتحاد نے حوثی باغیوں کا اسلحہ بردار ٹرک تباہ کردیا

باغیوں کے خلاف عرب اتحادی فوج کی کامیاب کارروائیوں کا خیر مقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قیادت میں یمن میں آئینی حکومت کی حمایت میں باغیوں کے خلاف لڑنے والے عرب اتحاد کے جنگی طیاروں نے گذشتہ روز ایران نوازباغیوں کو اسلحہ کی فراہمی کی کوشش ناکام بناتےہوئے ایک اسلحہ بردار ٹرک مکمل طور تباہ کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عرب اتحادی فوج کے جنگی طیاروں نے مغربی یمن کے الحدیدہ شہر کےقریب الصلیف بندرگاہ سے اسلحہ لاد کر جزیرہ کمران پہنچنے والے ایک اسلحہ بردار ٹرک کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں ٹرک اور اس پر لادا گیا اسلحہ مکمل طور پرتباہ ہوگئے۔

یمنی سیکیورٹی ذریعے کے مطابق جزیرہ کمران میں اتحادی فوج کی بمباری میں تباہ ہونے والا اسلحہ کشتیوں کی مدد سے الحدیدہ کے ساحل پر لایا گیا تھا جہاں سے اسے ٹرک پر لاد کر باغیوں کے مراکز تک پہنچانے کی کوشش کی گئی تھی۔

یمنی فوج کے ایک ذمہ دار ذریعے کا کہنا ہے کہ اتحادی فوج سمندر کے راستے باغیوں کو اسلحہ کی سپلائی کی کوشش پر نظر رکھے ہوئے تھی۔ جب باغیوں کے لیے بھیجا گیا اسلحے سے لدا ٹرک جزیرہ کمران پہنچا تو اتحادی فوج نے محتاط انداز میں کارروائی کرکے اسے تباہ کردیا۔

ادھر یمنی فوج کے سربراہ جنرل محمد علی المقدشی نےمملکت سعودی عرب کی قیادت میں سرگرم عرب اتحاد کی یمنی باغیوں کے خلاف کامیابی کارروائیوں کی تحسین کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ عرب اتحادی فوج کے فضائی حملوں میں نہ صرف باغیوں کو بھاری جانی اور مالی نقصان پہنچا ہے بلکہ باغیوں کو کئی محاذوں پر پسپائی اور شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

یمن کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق آرمی چیف نے جمعرات کو شمال مشرقی گورنری الجوف میں باغیوں کے خلاف جاری لڑائی کا جائزہ لیا۔ آرمی چیف جنرل المقدشی اگلے مورچوں پر گئے اور فوجی جوانوں کی حوصلہ افزائی کی۔