.

سعودی عرب : قطیف کے دہشت گرد کی تصویر میں حزب اللہ کا پرچم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں سزائے موت پانے والے 4 دہشت گردوں میں سے ایک تخریب کار کی تصویر سامنے آئی ہے جس میں وہ لبنانی ملیشیا حزب اللہ کا پرچم اپنے گلے میں ڈالا ہوا نظر آ رہا ہے۔ سعودی عرب نے منگل کے روز قطیف سے تعلق رکھنے والے چار دہشت گردوں کے خلاف قصاص کی سزا پر عمل درامد کیا۔ ان افراد نے سعودی سکیورٹی فورسز پر دوران گشت فائرنگ کر کے امن و امان کی صورت حال خراب کرنے کی کوشش کی تھی۔ موت کے گھاٹ اتارے جانے والے چاروں افراد کے نام یہ ہیں زاہر عبد الرحيم حسين البصری ، یوسف علی عبداللہ المشیخص ، مہدی محمد حسن الصایغ اور امجد ناجی حسن آل امعيبد اور ان تمام کا تعلق سعودی عرب سے ہے۔

دہشت گردی اور شدت پسند تنظیموں کے امور کے ماہر حمود الزیادی نے ٹوئیٹر پر ایک دہشت گرد کی تصویر نشر کی ہے جس نے لبنانی تنظیم حزب اللہ کے نام کا پٹکا اپنی گردی میں ڈال رکھا ہے۔ الزیادی نے لبنانی حزب اللہ کے اُن جماعتوں کے ساتھ رابطوں سے متعلق معلومات کا بھی ذکر کیا جو سعودی عرب یا بحرین میں سرگرم رہتی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے الزیادی نے بتایا کہ قطیف میں سرگرم گروپوں کو سعودی عرب اور بحرین میں دہشت گردی پھیلانے کے واسطے تربیت فراہم کی گئی۔ یہ گروپ انتظامی اور عملی طور پر حزب اللہ اور اسی طرح عراقی حزب اللہ بریگیڈز کے ساتھ مربوط ہیں۔ ان کے عناصر نے مذہبی زیارت اور دوروں کے نام پر گزشتہ تین برسوں کے دوران تربیت حاصل کی اور پھر سعودی عرب اور بحرین میں فرقہ واریت کی بنیاد پر فتنہ فساد بھڑکانے ، اشتعال انگیزی پھیلانے اور اغوا اور قتل کی کارروائیاں کرنے کے واسطے سرگرم ہو گئے۔

قطیف یا بحرین میں ان شدت پسند تنظیموں کے قطر کے ساتھ تعلق کے حوالے سے الزیادی کا کہنا ہے کہ قطری حکام کا خطے میں سنی اور شیعہ دہشت گرد تنظیموں کے ساتھ بہت قریبی تعلق ہے۔ الزیادی نے باور کرایا کہ قطر کے ریاستی حکام کا حزب اللہ کے ساتھ تعلق خصوصی نوعیت کا ہے جو تمام شیعہ شدت پسند جماعتوں کو حرکت میں لاتی ہے اور وہ ہی خطے میں تمام دہشت گرد گروپوں کو چلا رہی ہے۔

الزیادی کے مطابق ماضی کے عرصے میں یہ بات سامنے آ گئی کہ عراق کی حکومت نے کس طرح اُن کروڑوں کی رقم کا انکشاف کیا جو اُس کو مطلع کیے بغیر طیارے کے ذریعے لائی گئی۔ یہ اُن شدت پسند جماعتوں کے لیے فنڈنگ کا ایک حصہ ہے جو سعودی عرب اور بحرین میں دہشت گرد ٹولیوں کو سپورٹ فراہم کر رہی ہیں۔