عراق : داعش سے برآمد سامان میں طیارہ شکن توپ اور بارود سے بھری گاڑیاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراقی پولیس نے موصل شہر کو داعش تنظیم سے آزاد کرانے کے آپریشن کے دوران شدت پسند تنظیم کے قبضے سے برآمد ہونے والے ہتھیاروں کو میڈیا کے سامنے پیش کیا ہے۔ ان میں کار بم دھماکوں کے لیے تیار کی جانے والی گولہ بارود سے بھری 23 سواریاں اور طیارہ شکن توپ شامل ہے۔

میڈیا کے سامنے پیش کی جانے والی زیادہ تر عام شہری گاڑیاں تھیں جن کو دھات کی ڈھالوں سے ڈھانپا گیا تھا اور ان کے اندر بڑی تعداد میں بم نصب کیے گئے۔ ایسا نظر آتا ہے کہ ان گاڑیوں کو خودکش حملوں کے واسطے تیار کیا گیا۔

عراقی پولیس کے کیپٹن بسام حلو کاظم کے مطابق ریپڈ ایکشن فورس اور وفاقی پولیس نے خفیہ کارروائیوں کے ذریعے ان گاڑیوں کو قبضے میں لیا۔

ان تمام سواریوں میں ایک بڑے ٹرک پر رکھی ہوئی توپ نظروں کا مرکز بن گئی جس کے بارے میں پولیس ذمے داران کا کہنا ہے کہ اس کو بڑے فاصلے سے فوجی طیاروں اور زمینی افواج کو نشانہ بنانے کے لیے ڈیزائن کیا گیا۔

عراقی افواج داعش کے قبضے سے حاصل ہونے والی تمام سواریوں کو تباہ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

1
مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں