.

عراقی وزارت دفاع کا ایرانی میڈیا پر جھوٹ کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ وزیر دفاع عرفان الحیالی نے ایسا کوئی بیان نہیں دیا جس میں یہ کہا گیا ہے کہ کردستان میں ریفرنڈم کے بعد کُرد ریاست کے قیام کی صورت میں عراقی فوج مداخلت کرے گی۔

وزارت دفاع نے باور کرایا کہ اس حوالے سے ایرانی خبر رساں ایجنسی فارس اور بعض ویب سائٹوں کی جانب سے نشر کی جانے والی خبر بے بنیاد ہے اور عراقی وزیر دفاع نے اس سلسلے میں کوئی بیان جاری نہیں کیا۔

واضح رہے کہ ایرانی خبر رساں ایجنسی فارس نے عراقی وزیر دفاع سے یہ بیان منسوب کیا تھا کہ عراقی فوج ملک کی تقسیم پر روک لگائے گی اور کسی بھی نئے فتنے کی اجازت نہیں دے گی۔ فارس کے مطابق عراقی وزیر دفاع عرفان الحیالی نے یہ بات اتوار کے روز تہران میں ایران کی قومی سپریم کونسل کے سکریٹری جنرل علی شمخانی سے ملاقات کے دوران کہی۔