اسرائیلی فوج کا مسجد اقصی کے اطراف نمازیوں پر دھاوا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مقبوضہ بیت المقدس میں قابض اسرائیلی فوج نے نماز جمعہ کے بعد مسجد اقصی کے اطراف نمازیوں پر دھاوا بول دیا۔

"العربیہ" کے نمائندے کے مطابق اسرائیلی فوج نے بیت لحم کے شمال میں نمازیوں پر حملہ کیا جب کہ محکمہ اسلامی اوقاف نے بتایا کہ 10 ہزار سے زیادہ نمازیوں نے مسجد اقصی میں نماز جمعہ ادا کی۔

اطلاعات کے مطابق بیت المقدس کے شہری آج ’جمعہ نصرت الاقصیٰ‘ منا رہے ہیں۔ اسرائیلی فوج نے مسجد اقصیٰ میں فلسطینیوں کا راستہ روکنے کے لیے مختلف حربے اختیار کیے۔ جگہ جگہ رکاوٹوں کے ساتھ ساتھ 50 سال سے کم عمر کے فلسطینیوں کو قبلہ اول میں داخلے سے روک دیا گیا۔

مسجد میں گذشتہ روز سے اعتکاف میں بیٹھے سیکڑوں شہریوں کو اسرائیلی فوج نے باہر نکال دیا۔ العربیہ کے نامہ نگار کے مراسلے کے مطابق جمعرات کی شام اسرائیلی فوج کی بھاری نفری نے قبلہ اول کو گھیرے میں لے لیا اور مسجد میں موجود فلسطینیوں کو باہر نکال دیا گیا۔ اسرائیلی فوج نے بڑی تعداد میں شہریوں کو گرفتار بھی کر لیا۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ اسرائیلی فوج نے مسجد اقصیٰ کے باب الجنائز میں گھس کر توڑ پھوڑ کی اور مسجد اقصیٰ کی بجلی بند کردی گئی تا کہ وہاں پرموجود شہری مسجد سے باہر نکلنے پر مجبور ہوجائیں۔

1

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں