ایران کا فضاء میں میزائل تجربہ اشتعال انگیزی ہے:امریکا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا نے فضاء میں مصنوعی سیارے کو پہنچانے کے لیے کیے گئے ایران کے تازہ میزائل تجربے کو اشتعال انگیزی قرار دیتے ہوئے اسے عالمی سلامتی کونسل کی قراردادوں اور جوہری معاہدے کی روح کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

امریکی وزارت خارجہ کی ترجمان ھیذر نویرٹ نے واشنگٹن میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایران کا تازہ میزائل تجربہ بیلسٹک میزائل تجربات کا تسلسل ہے۔ امریکا اس پیش رفت کو انتہائی خطرناک قرار دیتا ہے۔ رات گئے اور صبح کو ایران کی جانب سے کیے گئے میزائل تجربات کو ہم جوہری معاہدے کی روح، عالمی قراردادوں اور بین الاقوامی معاہدوں کی خلاف ورزی سمجھتے ہیں۔

ایران کی سرکاری ٹی وی کے مطابق تہران نے جمعرات کو دعویٰ کیا ہے کہ اس نے مصنوعی سیاروں کو زمین کے مدار سے باہر لے جانے کے والے میزائل کا کامیاب تجریہ کیا ہے۔

’سیمرگ‘ کے نام سے اس نئے میزائل کی خصوصیت یہ ہے کہ یہ 500 کلو میٹر بلندی میں 250 کلو گرام مصنوعی سیارے کو لے جانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

سرکاری ٹی وی کے مطابق یہ تجربہ مصنوعی سیاروں کے لیے مختص خمینی اسپیس سینٹر سے کیا گیا۔ سرکاری ٹی وی پرمیزائل کو فضاء میں لانچ کرتے بھی دکھایا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں