.

بیت المقدس: چاقوحملے کے الزام میں فلسطینی لڑکی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی پولیس نے مقبوضہ بیت المقدس سے ایک فلسطینی لڑکی کو یہودی فوجیوں پر چاقو سے حملے کی کوشش کے الزام میں حراست میں لیا ہے۔

خبر رساں اداروں کے مطابق اسرائیلی پولیس کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ایک فلسطینی لڑکی نے مشرقی بیت المقدس میں باب العامود کے مقام پر سلطان سلیمان کالونی میں اسرائیلی بارڈر سیکیورٹی فورسز کے ایک اہلکار پر چاقو سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں اہلکار کو گہرے زخم آئے ہیں۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی پولیس نے حملہ آور فلسطینی لڑکی کو حراست میں لینے کے بعد تفتیش کے لیے کسی نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔ جب کہ زخمی اسرائیلی اہلکار کو ایمبولینس کی مدد سے اسپتال منتقل کیا گیا ہے جہاں اس کی طبی حالت کے بارے میں معلومات نہیں مل سکیں۔

واقعے کے بعد اسرائیلی فوج کی بھاری نفری نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔ اسرائیلی فوج نے جائے وقوعہ کو نو گو ایریا قرار دے کر کسی غیر متعلقہ شخص کو اس طرف جانے سے روک دیاتھا۔

خیال رہے کہ اکتوبر 2015ء کے بعد مقبوضہ بیت المقدس اور غرب اردن میں جاری پرتشدد کارروائیوں میں 293 فلسطینی شہید اور 47 صہیونی ہلاک ہو چکے ہیں۔