.

مصر: ہوٹل سپروائزر کے قتل کے الزام میں اطالوی سیاح گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے ساحلی سیاحتی مقام مرسی علم میں ایک اطالوی سیاح کو ہوٹل کے سپروائزر کو قتل کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ہوٹل کے نگران انجنئیر طارق احمد عبدالحمید نے جمعرات کے روز ایک اطالوی سیاح کو ممنوعہ علاقے میں داخل ہونے پر خبردار کیا تھا۔اس پر ان دونوں کے درمیان ہاتھا پائی ہو گئی تھی اور اطالوی سیاح کے تشدد سے طارق احمد جان کی بازی ہار گئے تھے۔

مصر کی وزارت سیاحت نے جمعہ کو ایک بیان میں کہا تھا کہ اطالوی سیاح ایوان پاسکال مورو نے مقتول کی ناگہانی موت کا سبب بننے کا اعتراف کر لیا ہے۔اس مشتبہ ملزم کو پولیس نے ہفتے کو مزید سات روز کے لیے ریمانڈ پر تحویل میں لے لیا ہے۔

اٹلی میں متعیّن مصر کی وزارت سیاحت کے ایک اہلکار مرسی علم آرہے ہیں اور وہ مورو کے دونوں بچوں کو اپنے ساتھ واپس اٹلی لے کر جائیں گے۔ ان دونوں بچوں کی عمریں چھے اور پندرہ سال ہیں اور یہ واقعے کے وقت ہوٹل میں موجود تھے۔اس وقت وہ دونوں ہوٹل کے ایک ملازم کی تحویل میں ہیں۔