.

قطرمیں موجود امریکی کمپنیوں کو نہیں چھیڑیں گے: گروپ چار

دوحہ کا بائیکاٹ کرنے والے چار رکنی عرب ممالک کی امریکا کو یقین دہانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

قطر کا سفارتی اور تجارتی بائیکاٹ کرنے والے چار عرب ممالک کی طرف سے امریکا کو یقین دلایا گیا ہے کہ گروپ چار قطر کے ساتھ کام کرنے والی امریکی کمپنیوں کو گزند نہیں پہنچائے گا۔

العربیہ ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر پر مشتمل چار ملکی اتحاد نے امریکا کو پیغام بھیجا ہے کہ وہ قطر میں کام کرنے والی اپنی تجارتی کمپنیوں کے حوالے سے کسی پریشانی کا شکار نہ ہو۔ عرب ممالک قطر کے ساتھ معاہدے کرنے والی کسی امریکی کمپنی کو سزا نہیں دیں گے۔ قطر میں کام کرنے والی امریکی اور دوسری غیر ملکی فرموں کو اپنے منصوبوں پر کام جاری رکھنے کا بھرپور موقع دیا جائےگا۔

خیال رہے کہ خبر رساں ادارے’رائٹرز‘ کے مطابق امریکی حکومتی حلقوں میں بھی قطر میں کام کرنے والی امریکی کمپنیوں کے حوالے سے خدشات کا اظہار کیا جا رہا تھا تاہم امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹیلرسن نے ان خدشات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ دوحہ پر چار عرب ممالک کی پابندیاں امریکی کمپنیوں پر اثر انداز نہیں ہوں گی۔

یورپی یونین کی جانب سے بھی اسی حوالے سے بات چیت کی گئی ہے۔ یورپی یونین اور متحدہ اور متحدہ عرب امارات کے درمیان ہونے والی بات چیت میں قطر میں کام کرنے والی یورپی کمپنیوں کو آزادانہ کام جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا تھا۔ دوحہ کا بائیکاٹ کرنے والے ممالک کی طرف سے یورپی یونین کو زبانی یقین دہانی کرائی گئی تھی کہ اقتصادی پابندیوں سے قطر میں کام کرنے والی یورپی اور دیگر غیر ملکی سرمایہ کار کمپنیاں متاثر نہیں ہوں گی۔