.

داعش تنظیم کے خلاف لبنانی فوج کا "فجر الجرود" آپریشن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنانی فوج نے ملک کے مشرق میں شام کی سرحد کے نزدیک علاقے سے داعش تنظیم کو نکالنے کے لیے ہفتے کو ایک فوجی آپریشن شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔

ٹوئیٹر پر فوج کے کمانڈر جوزف عون کے حوالے سے تصدیق کی گئی ہے کہ "فجر الجرود" کے نام سے آپریشن شروع ہو چکا ہے۔

ذرائع کے مطابق لبنانی فوج نے راس بعلبک کے نواحی علاقوں اور القاع میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر بم باری کی۔ ادھر ایک سکیورٹی ذمے دار نے اعلان کیا ہے کہ داعش کے ٹھکانوں کو میزائلوں ، توپ خانوں اور فوجی ہیلی کاپٹروں کے ذریعے نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

اس دوران ذرائع نے باور کرایا ہے کہ فوج کئی سمتوں سے داعش کے ٹھکانوں پر ایک بڑا حملہ کرے گی۔

دوسری جانب لبنانی میڈیا نے بتایا ہے کہ لبنان کے صدر میشیل عون نے آپریشن کی نگرانی کے لیے وزارت دفاع کو ہدایات جاری کی ہیں۔

سکیورٹی ذریعے کے مطابق ملک کے شمال مشرق میں النصرہ محاذ تنظیم کے بعض ٹھکانوں پر لبنانی فوج کے کنٹرول حاصل کرنے کے بعد ہتھیاروں کے ایک خفیہ ڈپو سے زمین سے فضا میں مار کرنے والا "سام" میزائل ملا ہے۔ علاوہ ازیں ڈپو سے امریکی ساخت کے ٹینک شکن "ٹاؤ" میزائل بھی ملے ہیں۔