.

قطر نے کاتالونیا میں "شدت پسندی کے گڑھ" کی فنڈنگ کی : ہسپانوی اخبار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک ہسپانوی اخبار نے قطر کی جانب سے ہسپانیہ بالخصوص کاتالونیا ریجن میں اسلامی مراکز اور مساجد کی فنڈنگ کا انکشاف کیا ہے۔ واضح رہے کہ یہ وہ ہی ریجن ہے جہاں بارسلونا میں دو دہشت گرد حملوں کا وقوع ہوا۔

اخبار کے مطابق دوحہ دولت مند کاروباری شخصیات کے ذریعے مذکورہ علاقے میں مالی سپورٹ پیش کرتا ہے جس کے نتیجے میں ہسپانیہ میں انتہا پسندی کا رجحان پروان چڑھا۔

ہسپانوی اخبار "لیراتھون" کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ہسپانیہ میں عبادت کے مراکز کے لیے مالی سپورٹ بیرون ملک بالخصوص دوحہ سے آتی ہے۔ اس سپورٹ کا محور کاتالونیا ریجن ہے جو اخبار کے مطابق شدت پسندی اور دہشت گردی کا گڑھ بن گیا ہے۔

رپورٹ میں واضح کیا گیا ہے کہ دولت مند تاجروں کے واسطے سے قطر کی جانب سے مالی رقوم ملنے کے سبب ہسپانیہ میں اسلامی مراکز اور مساجد سخت سکیورٹی نگرانی میں آ گئی ہیں۔

معلومات کے مطابق ہسپانیہ میں موجود 25 لاکھ مسلمانوں میں سے 7 فی صد مسلمان کاتالونیا میں رہتے ہیں۔

ہسپانیہ میں 1260 سے زیادہ اسلامی مراکز ہیں جن میں 256 مساجد صرف کاتالونیا میں واقع ہیں جہاں مہاجرین کی شرح بہت زیادہ ہے۔