.

العیاضیہ، تلعفر کی مکمل واپسی کی راہ میں آخری رکاوٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی مشترکہ آپریشنز کمان کے سرکاری ترجمان بریگیڈیئر جنرل یحیی الزبیدی نے باور کرایا ہے کہ عراقی فوج کے یونٹوں نے العیاضیہ کی جانب پیش قدمی شروع کر دی ہے جو تلعفر ضلعے میں داعش کی موجودگی کا آخری علاقہ ہے۔ الزبیدی کے مطابق العیاضیہ کا مکمل طور پر گھیراؤ کر لیا گیا ہے اور اس کے اندر داعش کے ارکان کو فضائی حملوں کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

عراقی فوج نے اتوار کے روز اعلان کیا تھا کہ معرکہ شروع ہونے کے 8 روز بعد تلعفر ضلعے کے کُل 29 علاقوں میں سے زیادہ تر کا کنٹرول حاصل کر لیا گیا ہے۔ عراقی فوج کو العیاضیہ پر کنٹرول حاصل کرنے کا انتظار ہے جس کے بعد مکمل فتح کا اعلان کیا جائے گا۔

دوسری جانب سعودی عرب نے داعش تنظیم کے خلاف سرکاری فورسز کی مسلسل کامیابیوں پر عراق کو مبارک باد پیش کی ہے۔ سعودی وزارت خارجہ کے ذریعے نے ایک مرتبہ پھر باور کرایا ہے کہ مملکت دہشت گردی اور شدت پسندی کے خلاف جنگ میں مکمل طور پر عراق کے شانہ بشانہ کھڑی ہے یہاں تک کہ اس پر قابو پالیا جائے۔