.

لبنان میں عالمی امن فوج کے قیام میں ایک سال کی توسیع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عالمی سلامتی کونسل نے لبنان میں بین الاقوامی امن فوج ’یونیفیل‘ کے قیام میں مزید ایک سال کی توسیع کی کی منظوری دی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق بدھ کے روز سلامتی کونسل کے اجلاس میں ایک قرارداد پیش کی گئی جس میں لبنان میں عالمی امن فوج کے قیام میں توسیع کی سفارش کی گئی تھی۔ اجلاس میں امریکا کی مخالفت کے باوجود عالمی امن فوج کی لبنان میں قیام کی توسیع کی منظوری دی گئی۔

غیرملکی خبررساں اداروں کے مطابق عالمی امن فوج کی تعیناتی کے معاملے پر امریکی اور یورپی مندوبین کے درمیان گرما گرم بحث کی گئی۔ سفارت کاروں کے مطابق لبنان میں تعینات عالمی امن فوج میں سب سے زیادہ تعداد فرانس اور اٹلی کے فوجیوں کی ہے۔ یورپی ممالک اور امریکا کے درمیان لبنان میں بین الاقوامی فوج کی قیادت کے بارے میں اختلافات تھے۔

یونیفیل فورس کے قیام کی مدت آج 31 اگست کو ختم ہو رہی ہے۔ اس وقت لبنان میں متعین عالمی امن فوج کی تعداد 10 ہزار 500 ہے۔

قبل ازیں اقوام متحدہ میں امریکی سفیر نیکی ہالے نے کہا تھا کہ عالمی امن فوج کی تعیناتی میں توسیع محض تکنیکی بنیادوں پر نہیں ہونی چاہیے بلکہ اس کی کارکردگی میں بہتری لانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکا چاہتا ہے کہ اس کے حلیف اسرائیل کو یونیفیل میں مضبوط قوت کے طور پر شامل کیا جائے تاکہ جنوبی لبنان سے حزب اللہ کو اسلحہ کی اسمگلنگ کی روک تھام کی جاسکے۔