.

روس کے فضائی حملے میں داعش کے وزیر ِجنگ سمیت متعدد کمانڈر ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس نے دعویٰ کیا ہے کہ شام میں اس کے ایک فضائی حملے میں داعش کے وزیر جنگ سمیت متعدد سرکردہ کمانڈر مارے گئے ہیں۔

روس کی وزارت دفاع نےجمعہ کو اپنے فیس بُک صفحے پر جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ روسی فضائیہ نےمشرقی شہر دیر الزور میں داعش کی ایک کمان پوسٹ اور ایک مواصلاتی مرکز پر بمباری کی ہے جس کے نتیجےمیں داعش کے کم سے کم چالیس جنگجو مارے گئے ہیں‘‘۔

وزارت دفاع کے مطابق ’’فضائی حملے میں داعش کے چار سرکردہ کمانڈروں کی ہلاکت کی بھی تصدیق ہوئی ہے۔ان میں دیر الزور کا امیر ابو محمد الشمالی بھی شامل ہے’’۔

داعش کے وزیر جنگ کا نام گل مرد خلیموف بتایا گیا ہے اور وہ تاجکستان کا رہنے والا ہے ۔وہ ماضی میں تاجکستان کی وزارتِ داخلہ کی خصوصی فورسز کا سربراہ بھی رہا تھا اور اس نے 2015ء میں داعش میں شمولیت اختیار کی تھی۔

شامی فوج دیر الزور میں داعش کے جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کررہی ہے اور اس کو روسی فوج کی فضائی مدد حاصل ہے۔شامی فوجیوں نے منگل کے روز داعش کے جنگجوؤں کا محاصرہ توڑ دیا تھا۔انھوں نے گذشتہ قریباً چار سال سے دیر الزور پر قبضہ کررکھا ہے اور اس کے شہری داعش کی ہمہ نوع پابندیوں میں زندگی بسر کررہے ہیں۔