.

روس کی درخواست پر بین الاقوامی اتحاد نے داعش کے قافلے کی نگرانی روک دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایسے میں جب کہ شام میں امریکی اور روسی رابطہ کاری سے دیر الزور میں داعش کے خلاف فیصلہ کن معرکے کی عسکری تیاریاں اپنی جگہ موجود ہیں.. بین الاقوامی اتحاد نے اعلان کیا ہے کہ ماسکو کی درخواست پر اُس نے جاسوس طیاروں کے ذریعے داعش تنظیم کی بسوں کے اُس قافلے کی نگرانی روک دی ہے جو عراقی سرحد کے نزدیک شام کے صحراء میں داعش جنگجوؤں اور ان کے اہل خانہ کو لے کر جا رہا ہے۔

اتحاد نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ نگرانی کو اس واسطے روکا گیا ہے تا کہ تنظیم کو ہزیمت سے دوچار کرنے کی کوششوں میں کسی بھی تصادم سے اجتناب کو یقینی بنایا جا سکے۔

بین الاقوامی اتحاد کے آپریشنز ڈائریکٹر بریگیڈیئر جنرل جون براگا کے مطابق شامی حکومت کی افواج شام کے مشرقی صحرا میں داعش کی 11 بسوں کے نزدیک سے بنا حملہ کیے گزر گئیں۔ براگا نے ایک مرتبہ پھر باور کرایا کہ ان بسوں کو عراقی سرحد کے نزدیک نہیں آنے دیا جائے گا۔

دیر الزور کے معرکے کی پیش رفت کے حوالے سے سیریئن ڈیموکریٹک فورسز کے ایک ذمے دار نے انکشاف کیا کہ دیر الزور میں داعش کے خلاف عسکری کارروائیوں کے آغاز کا جلد اعلان کیا جائے گا۔

اس سے قبل شامی فوجی ذریعے نے اعلان کیا تھا کہ بشار کی فوج نے دیر الزور کے فوجی ہوائی اڈے پر اور اس کے اطراف کے علاقوں میں داعش تنظیم کے محاصرے کو ختم کرنے کے لیے نیا حملہ شروع کر دیا ہے۔

اس پیش رفت کے تحت شام میں انسانی حقوق کے نگراں گروپ "المرصد" نے تصدیق کی ہے کہ شامی اراضی کا 70 فی صد حصّہ شامی حکومت کی فوج اور سیریئن ڈیموکریٹک فورسز کے ہاتھ آ گیا ہے۔