.

دمشق ہوائی اڈے کے نزدیک حزب اللہ کے ڈِپو پر اسرائیل کی بم باری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں انسانی حقوق کی نگرانی کرنے والے گروپ "المرصد" نے بتایا ہے کہ اسرائیل نے جمعرات کی شب دمشق کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے نزدیک لبنانی ملیشیا حزب اللہ کے ایک اسلحہ ڈپو کو بم باری کا نشانہ بنایا ہے۔ المرصد کے ڈائریکٹر نے جمعے کے روز فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ اسرائیلی جنگی طیاروں نے حزب اللہ کے ہتھیاروں کے گودام کو میزائلوں سے نشانہ بنایا۔

یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ ہوائی اڈے کے اطراف میں دھماکوں کی آوازیں سنی گئیں تاہم ابھی تک شامی حکومت یا اسرائیل کی جانب سے کوئی تبصرہ سامنے نہیں آیا ہے۔

ادھر اسرائیلی میڈیا نے بتایا ہے کہ اسرائیل نے دمشق کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر گولہ بارود کے گوداموں کو حملوں کا نشانہ بنایا۔
یاد رہے کہ شامی حکومت نے سات ستمبر کو اقرار کیا تھا کہ اسرائیلی طیاروں نے حماہ صوبے میں ایک فوجی ٹھکانے کو نشانہ بنایا۔ شامی حکومت کی خبر رساں ایجنسی (SANA) نے عسکری قیادت کے حوالے سے بتایا تھا کہ یہ بم باری مصیاف شہر کے قریب ہوئی جس میں دو اہل کار ہلاک ہو گئے۔ ادھر شامی کارکنان کے مطابق اسرائیلی فضائیہ نے حماہ کے قریب کیمیائی ہتھیاروں کے ایک کارخانے کو نشانہ بنایا۔