کرد لیڈر آزادی ریفرینڈم کا نتیجہ منسوخ کردیں : حیدر العبادی

اگر کرد بات چیت کا آغاز چاہتے ہیں تو انھیں ریفرینڈم اور اس کا نتیجہ منسوخ کرنا ہوگا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

عراق کے وزیراعظم حیدر العبادی نے کرد حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ خودمختار کردستان میں منعقدہ آزادی ریفرینڈم کے نتیجے کو منسوخ کردیں تاکہ بحران کو مذاکرات کے ذریعے طے کیا جاسکے۔

انھوں نے بدھ کے روز عراقی پارلیمان میں تقریر کرتے ہوئے کردستان کی علاقائی حکومت کے صدر مسعود بارزانی سے اس مطالبے کا اعادہ کیا ہے کہ’’ وہ آیندہ جمعہ تک بین الاقوامی ہوائی اڈوں کا کنٹرول بغداد حکومت کے حوالے کردیں، دوسری صورت میں کردستان کے لیے براہ راست بین الاقوامی پروازوں پر پابندی عاید کردی جائے گی‘‘۔

انھوں نے کہا کہ’’ ہم ریفرینڈم کے نتیجے پر کوئی مذاکرات نہیں کریں گے۔اگر کرد بات چیت کا آغاز چاہتے ہیں تو پھر انھیں ریفرینڈم اور اس کے نتیجے کو منسوخ کرنا ہوگا‘‘۔

عراقی وزیراعظم کے اس مطالبے کو کردستان کے ٹرانسپورٹ کے وزیر مولود مراد نے مسترد کردیا ہے ۔انھوں نے کردستان کے دارالحکومت اربیل میں ایک نیوز کانفرنس میں کہا کہ ’’ ہوائی اڈوں پر کنٹرول اور اربیل کے لیے براہ راست بین الاقوامی پروازوں کو برقرار رکھنا داعش کے خلاف جنگ لیے ناگزیر ہے‘‘۔

مولود مراد نے اس توقع کا اظہار کیا ہے کہ اس بحران کو آیندہ جمعہ تک حل کیا جاسکتا ہے۔ان کے بہ قول اگر یہ بحران جاری رہتا ہے تو اس سے کردستان کی معیشت کو نقصان پہنچے گا۔

خود مختار شمالی علاقے کردستان میں سوموار کو آزادی کے نام پر ریفرینڈم منعقد کیا گیا تھا اور اس میں کرد رجسٹر ووٹروں کی اکثریت نے آزادی کے حق میں ووٹ دیا ہے۔خود مختار کردستان کے صدر مسعود بارزانی قبل ازیں یہ کہہ چکے ہیں کہ ریفرینڈم میں ’’ ہاں‘‘ میں ووٹ کا یہ مطلب نہیں ہوگا کہ فوری طور پر عراق سے آزادی کا اعلان کردیا جائے گا بلکہ اس کے بعد تو بغداد کے ساتھ سنجیدہ مذاکرات کا آغاز ہوگا اور یہ سلسلہ ڈیڑھ ،دو سال تک چل سکتا ہے۔

کرد لیڈروں کا کہنا ہے کہ ریفرینڈم کے انعقاد سے انھیں ایسا مینڈیٹ حاصل ہوگیا ہے جس کے ذریعے وہ اپنے علاقے کی عراق سے پُرامن طور پر علاحدگی کے لیے بغداد حکومت سے مذاکرات آغازکرسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ عراق کی شہری ہوابازی کی اتھارٹی نے بدھ کو غیر ملکی فضائی کمپنیوں کو ایک نوٹس بھیجا ہے اور اس میں انھیں خبردار کیا ہے کہ کردستا ن کے دو شہروں اربیل اور سلیمانیہ کے لیے جمعہ کو گرینچ معیاری وقت ( جی ایم ٹی ) کے مطابق 1500 بجے سے بین الاقوامی پروازیں معطل کردی جائیں گے اور ان شہروں کے درمیان صرف اندرون ملک ہی پروازیں چل سکیں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں