سعودی خواتین کے ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے کے لیے مطلوب اقدامات ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں خواتین کو گاڑی چلانے کی اجازت سے متعلق شاہی فرمان جاری ہونے کے بعد سے سوشل میڈیا اور دیگر حلقوں میں یہ بحث جاری ہے کہ وہ کون سی شرائط ہیں جو خواتین کے ڈرائیونگ لائسنس کے حصول کے واسطے لاگو کی جائیں گی۔

سعودی خاتون ایڈوکیٹ بیان زہران نے "العربیہ ڈاٹ نیٹ" سے گفتگو کرتے ہوئے واضح کیا کہ "شاہی فرمان کے متن سے یہ بات سامنے آتی ہے کہ خواتین کے حوالے سے خاص شرائط نہیں ہیں اور ٹریفک کے نظام کے اصول مرد اور خواتین دونوں پر یکساں لاگو ہوں گے"۔

بیان زہران کے مطابق ٹریفک نظام کا آرٹیکل چھتیس ڈرائیونگ لائسنس کے حصول کی شرائط بیان کرتا ہے اور خواتین پر بھی غالبا ان ہی کا اطلاق ہو گا۔ یہ شرائط درجِ ذیل ہیں :

1 – موٹر بائیک اور گاڑی چلانے کے لائسنس کے حصول کے لیے عمر 18 برس ہونا۔

2 – پبلک ورک وہیکلز چلانے کے لائسنس کے حصول کے لیے عمر 20 برس ہونا۔

3 – مذکورہ بالا دونوں اقسام کے ڈرائیونگ لائسنس کے حصول کا خواہش مند کسی شخص کی عزت ، مال اور جان پر حملہ کرنے کے جرم میں سزا یافتہ نہ ہو کہ اس کی سابقہ حیثیت بحال نہ ہوئی ہو۔

4 – لائسنس حاصل کرنے کا امیدوار منشیات کے کاروبار ، اس کی تیاری ، اسمگلنگ اور اسے اپنے قبضے میں رکھنے کے حوالے سے عدالت سے سزا یافتہ نہ ہو کہ اس کی سابقہ حیثیت بحال نہ ہوئی ہو۔

5 – غیر سعودی باشندوں کے لیے باقاعدہ اقامہ۔

6 – اُن امراض اور معذوری کی حالتوں سے سلامت ہو جو متعلقہ سواری کے چلانے کی راہ میں مانع شمار کی جاتی ہوں۔

7 – ڈرائیونگ لائسنس کے لیے مطلوبہ ٹیسٹ میں کامیاب ہو اور متعلقہ لائسنس کے حصول کی شرائط پر پورا اترتا ہو۔

8 – مقررہ فیس کی ادائیگی۔

9 – سابقہ ٹریفک چالان ہونے کی صورت میں ان کی مکمل ادائیگی۔

یاد رہے کہ واشنگٹن میں سعودی سفیر شہزادہ خالد بن سلمان بن عبدالعزیز نے امریکی میڈیا کو دیے گئے بیان میں کہا تھا کہ سعودی خواتین کو ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے کے لیے اپنے ولی یا سرپرست کی اجازت کی ضرورت نہیں ہو گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں