.

اِدلِب اور حماہ پر بشار حکومت اور روس کے 70 سے زیادہ فضائی حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں روس اور بشار کی فوج کے فضائی طیاروں نے غیر مسبوق جارحیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے اِدلِب اور حماہ کے مختلف دیہی علاقوں پر 70 سے زیادہ حملے کیے۔

شام میں انسانی حقوق کے سب سے بڑے نگراں گروپ المرصد کے مطابق اِدلب صوبے میں جمعے اور ہفتے کی درمیانی شب ہونے والے فضائی حملوں میں کم از کم 28 شہری موت کی نیند سو گئے۔ المرصد کا کہنا ہے کہ ترکی کی سرحد کے نزدیک واقع قصبے ارمناز پر کی جانے والی اس بم باری کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والوں میں چار بچے بھی شامل ہیں۔ البتہ یہ واضح نہیں ہو سکا کہ حملہ روسی طیاروں نے کیا تھا یا شامی حکومت کی فضائیہ نے۔

دوسری جانب شام میں انسانی حقوق کے نیٹ ورک نے بتایا ہے کہ شمالی شام میں اِدلِب میں بشار حکومت اور اس کے حلیف روس کی جانب سے آٹھ روز سے سیف زون کی خلاف ورزیاں کی جا رہی ہیں۔ اس کے نتیجے میں اب تک 700 کے قریب فضائی حملوں میں 100 سے زیادہ شہری اپنی جانوں سے ہاتھ دھو چکے ہیں۔

واضح رہے کہ اِدلب پر یہ حملے ترکی اور روس کے صدور کے درمیان سربراہ ملاقات کے بعد کیے جا رہے ہیں جس میں دونوں شخصیات نے شمالی شام کے صوبے اِدلِب میں "سیف زون" کو مؤثر بنانے کی کوششوں کے عزم کا ارادہ کیا تھا۔