.

کُرد قوم کے بنیادی حقوق تسلیم کیے جائیں: میکرون

فرانسیسی صدر کا عراقی وزیر اعظم حیدر العبادی کو ٹیلی فون

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی صدر ایمانول میکروں نے جمعہ کو عراقی حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ کرد قوم کے دیرینہ حقوق اور مطالبات تسلیم کریں، تاہم ساتھ ہی انہوں نے فریقین پر صبر وتحمل سے کام لینے اور کشیدگی سے گریز پر بھی زور دیا۔ صدر میکروں کا کہنا تھا کہ فرانس عراق کی وحدت اور خود مختار برقرار رکھنے کا خواہاں ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق فرانسیسی صدر نے جمعہ کے روز عراقی وزیراعظم حیدر العبادی کو ٹیلیفون کیا اور انہیں بغداد اور صوبہ کردستان کے درمیان کشیدگی کم کرنے کے لیے کردار ادا کرنے کی پیش کش کی۔

بعد ازاں پیرس میں فرانسیسی ایوان صدر کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ صدر میکروں نے عراقی وزیر اعظم العبادی کو پانچ اکتوبر کو دورہ فرانس کی دعوت دی ہے تاکہ کردوں کی آزادی کے لیے کیے گئے ریفرینڈم اور اس کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال کا جائزہ لیا جاسکے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم العبادی نے دورہ فرانس کی دعوت قبول کرلی ہے۔

صدر ایمانویل میکروں نے کردوں اور عراقی حکومت پر زور دیا کہ وہ باہمی کشیدگی بڑھانے کے بجائے داعش کے خلاف جاری جنگ کو اولین ترجیح دیں۔ داعش کی شکست عراق کے استحکام کا ذریعہ ثابت ہوسکتی ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ صدر میکروں نے عراقی وزیراعظم سے ٹیلیفون پر بات چیت میں عراق کی وحدت کی حمایت کے ساتھ کردوں کے بنیادی حقوق کی بھی مکمل حمایت کی۔ ان کا کہنا تھا کہ تمام عراقی طبقات کو متحد رہ کر داعش کے خلاف جاری لڑائی میں اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔ صدر میکروں نے کہا کہ تمام فریقین کے لیے تحمل سے کام لینا اور کشیدگی کو بڑھانے سے گریز وقت کی اشد ضرورت ہے۔