.

غزہ کے انتظامی امور آج سے قومی حکومت کے سپرد

اختیارات سپردگی کی نگرانی مصری حکام کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطین میں سیاسی جماعتوں ’حماس‘ اور تحریک فتح کی جانب سے قومی مفاہمتی کوششوں کو آگے بڑھانے کے لیے تشکیل کردہ قومی حکومت آج سے غزہ میں وزارتوں اور دیگر شعبوں کا انتظامی کنٹرول اپنے ہاتھ میں لے رہی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اعلان کے مطابق فلسطینی مخلوط حکومت کے سربراہ رامی الحمد اللہ اپنے وزراء کے ہمراہ آج غزہ کی پٹی جائیں گے جہاں وہ حماس سے وزارتوں کے قلمدان اپنی کابینہ کو دیں گے۔

کل منگل کو غزہ کی پٹی میں اہم اجلاس ہوگا جس میں فلسطین میں قومی مفاہمت کا عمل آگے بڑھانے کے لیے آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔

فلسطینی قومی حکومت کے وزراء کی آمد سے قبل مصر کا ایک اعلیٰ اختیاراتی وفد بھی گذشتہ روز غزہ پہنچا ہے۔ وفد میں اسرائیل میں تعینات مصری سفیر بھی شامل ہیں۔

فلسطینی وفد نے غزہ میں اسلامی تحریک مزاحمت ’حماس‘ کے سیاسی شعبے کے سربراہ اسماعیل ھنیہ اور جماعت کے دوسرے ارکان سے بھی ملاقات کی ہے۔

مصرکے سیکیورٹی حکام کا وفد آج سوموار کو قومی حکومت کی جانب سے حکومتی ذمہ داریاں اپنے ہاتھ میں لینے کے حوالے سے ہونے والی تقریب میں شرکت کرے گا۔ مصری وفد کی زیر نگرانی غزہ کی پٹی کے انتظامی امور قومی حکومت کو سپرد کیے جائیں گے۔

ادھر غزہ کی پٹی میں وزارت داخلہ و نیشنل سیکیورٹی کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ غزہ کے تمام انتظامی امور قومی حکومت کو سپرد کیے جانے کے لیے ضروری اقدامات کرلیے گئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ غزہ کی پٹی میں آنے والے مہمانوں کی حفاظت کے لیے فول پروف سیکیورٹی پلان بھی تشکیل دیا گیا ہے۔