.

عراقی پارلیمنٹ میں کُرد ارکان کی رُکنیت معطل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں پارلیمنٹ نے کُرد ارکان کی رکنیت معطل کر دی ہے اور ساتھ ہی حکومت سے اس مطالبے پر زور دیا ہے کہ ریفرینڈم کے خلاف اقدامات کے حوالے سے پارلیمنٹ کی قرار داد پر عمل درامد کیا جائے۔

پارلیمنٹ کی پریذیڈنسی نے قانونی اور ارکان کے امور سے متعلق دونوں کمیٹیوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ایوان میں اُن ارکان کے نام پیش کریں جن کی ریفرینڈم میں شرکت ثابت ہو چکی ہے۔

یاد رہے کہ عراقی کردستان میں گزشتہ پیر کو عراق سے علاحدگی کے حوالے سے ریفرینڈم کرایا گیا تھا جس کو بغداد حکومت اور علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر وسیع پیمانے پر مسترد کر دیا گیا۔

عراقی وزیراعظم اور مسلح افواج کے کمانڈر حیدر العبادی نے کردستان کی انتظامیہ کو تین روز کی مہلت دی تھی جس میں وہ ہوائی اڈے اور سرحدی گرزگاہیں مرکزی حکومت کے حوالے کر دیں۔ مہلت ختم ہونے کے بعد اربیل اور سلیمانیہ کے لیے بین الاقوامی فضائی آمدورفت پر پابندی کا اعلان کر دیا گیا۔ اس کے نتیجے میں کئی بین الاقوامی فضائی کمپنیوں نے کردستان کے مذکورہ دونوں ہوائی اڈوں کے لیے اپنی پروازیں روک دینے کا اعلان کیا جن میں لبنانی کمپنی الشرق الاوسط اور مصری فضائی کمپنی شامل ہے۔