.

’داعش‘ الرقہ میں آخری سانس تک لڑے گی: عالمی اتحاد

الرقہ سے محصورین کے محفوظ انخلاء کے لیے مذاکرات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مشرق وسطیٰ میں ’داعش‘ کے خلاف سرگرم عالمی فوجی اتحاد نے کہا ہے کہ داعش کے بعض کمانڈروں کی جانب سے ہتھیار ڈالنے اور امریکی حمایت یافتہ فورسز کی پیش قدمی کے باوجود ’الرقہ‘ شہر میں داعش آخری سانس تک لڑنے کا عزم رکھتی ہے۔

العربیہ کے مطابق بین الاقوامی عسکری اتحاد کے ترجمان نے کہا کہ الرقہ سے داعش کو نکال باہر کیے جانے کے بعد مقامی سول کونسل کو مضبوط کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا الرقہ میں داعش کی جانب سے الرقہ میں انسانی ڈھال بنائے گئے ہزاروں شہریوں کو محفوظ راستہ دینے کے لیے مذاکرات جاری ہیں تاہم داعش کے کسی ایک جنگجو کو بھی بھاگنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

خیال رہے کہ شام میں الرقہ شہر داعش کا آخری مضبوط گڑھ ہے تاہم اس شہر میں بھی داعش کے پاؤں اکھڑ چکے ہیں۔ امریکی حمایت یافتہ سیرین ڈیموکریٹک فورسز نے قریبا الرقہ کے 90 فی صد علاقے سے داعش کو نکال باہر کیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ الرقہ میں پھنسے ہزاروں شہریوں کے محفوظ انخلاء کے لیے بھی بات چیت کی خبریں آ رہی ہیں۔