.

الرقہ داعش کے وجود سے مکمل طور پرپاک ہونے کے قریب

داعش کے باقی ماندہ جنگجو ہتھیار ڈالنے لگے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے شہر الرقہ میں دہشت گرد تنظیم ’داعش‘ کے خلاف امریکی حمایت یافتہ فورسز کا جاری آپریشن اختتامی مراحل میں داخل ہوگیا ہے۔

’العربیہ‘ اور برادر نیوز چینل ’الحدث‘ کے ذرائع کے مطابق الرقہ داعش کے وجود سے مکمل طور پر خالی ہونے کے قریب ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ الرقہ میں بچ جانے والے داعشی جنگجو ڈیموکریٹک سیرین فورسز کے سامنے ہتھیار ڈال رہے ہیں۔

ادھر امریکی اتحاد کے ترجمان نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا تھا کہ داعشی جنگجو الرقہ میں آخری دم تک لڑنے پر بہ ضد ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکی حمایت یافتہ فورسز کی پیش قدمی اور بہت سے جنگجوؤں کے ہتھیار ڈالنے کے باوجود داعش کے بعض جنگجو لڑائی جاری رکھنے پر ڈٹے ہوئے ہیں۔

بین الاقوامی عسکری اتحاد کے ترجمان کرنل ریان ڈیلون نے کہا کہ الرقہ سے داعش کو نکال باہر کیے جانے کےبعد مقامی سول کونسل کو مضبوط کیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا الرقہ میں داعش کی جانب سے الرقہ میں انسانی ڈھال بنائے گئے ہزاروں شہریوں کو محفوظ راستہ دینے کے لیے مذاکرات جاری ہیں تاہم داعش کے کسی ایک جنگجو کو بھی بھاگنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔