.

صنعاء : حوثیوں اور معزول صالح کے عناصر کے درمیان پھر سے جھڑپیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی دارالحکومت صنعاء کے وسطی علاقے حدہ میں پیر کے روز حوثی ملیشیا اور بغاوت میں ان کے بنیادی شراکت دار معزول صدر علی عبداللہ صالح کے عناصر کے درمیان پھر سے جھڑپیں بھڑک اٹھیں۔ یہ وہ ہی علاقہ ہے جہاں اگست کے اواخر میں ہونے والی جھڑپوں میں فریقین کے متعدد افراد ہلاک و زخمی ہو گئے تھے۔

عینی شاہدین کے مطابق مذکورہ علاقے میں مسلح حوثیوں اور معزول صالح کے ہمنوا پاسداران کے درمیان شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔ اگرچہ فائرنگ کا سلسلہ ایک گھنٹے بعد رک گیا تاہم علاقے میں خوف ناک حد تک کشیدگی پائی جا رہی ہے جب کہ حدہ اور دیگر ملحقہ علاقوں میں بڑی تعداد میں مسلح افراد پھیلے ہوئے نظر آ رہے ہیں۔

حوثی اخباری ویب سائٹوں نے باور کرایا ہے کہ یہ جھڑپیں اُس وقت شروع ہوئیں جب معزول صدر صالح کے بیٹے احمد کی رہائش گاہ کے بعض محافظین حوثیوں کے زیر کنٹرول علاقے میں اس حیلے کے ساتھ داخل ہو گئے کہ وہ بلند مقام سے مذکورہ رہائش گاہ کی سکیورٹی کو یقینی بنانا چاہتے ہیں۔

ویب سائٹوں کے مطابق حوثی ملیشیا نے معزول صالح کے ہمنوا ان افراد کو گرفتار کر لیا جس کے نتیجے میں جھڑپیں واقع ہوئیں۔