.

’دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سعودی عرب نے موثر کردار ادا کیا ’

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے مستقل مندوب عبداللہ المعلمی نے کہا ہے کہ ان کے ملک نے دہشت گردی کے خلاف قائم کردہ عالمی اتحاد میں شامل ہونے کے بعد دہشت گردی کی لعنت سے نجات کے لیے موثر کردار ادا کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق انسداد دہشت گردی کے مشاورتی مرکز میں ایک اجلاس کے بعد بات کرتے ہوئے المعلمی نے کہا کہ دہشت گردی کا خاتمہ ان کے ملک کی اولین ترجیح ہے اور سعودی عرب نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں نمایاں خدمات انجام دیں اور بہت سی قربانیاں پیش کی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ سعودیہ نے انسداد دہشت گردی مرکز قائم کرکے یہ ثابت کیا کہ الریاض اس لعنت سے چھٹکارا پانے کے لیے موثر اقدامات کررہا ہے۔

الحدث ٹی وی کے نامہ نگار سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انسداد دہشت گردی مرکز اپنے پروگرام کے مطابق دہشت گردوں کے مالی سرچشموں کو خشک کرنے کی کوششیں جاری رکھے گا۔

اس موقع پر اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے کہا کہ وہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سعودی عرب کی خدمات کو تسلیم کرتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ عالمی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سعودی عرب کی حمایت اور مدد جاری رکھیں گے۔

’یو این‘ سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کے زیرانتظام انسداد دہشت گردی مرکز نے دہشت گردی کو شکست دینے کے لیے موثر آئیڈیاز دیے ہیں۔ مرکز کے طریقہ کار پر عمل درآمد کے لیے فوری اقدامات کی ضرورت ہے تاکہ عالمی سطح پر دہشت گردی کو شکست دی جا سکے۔