.

عراقی وزیراعظم نے داعش سے چھڑائی گئی سرحدی گذرگاہ پر قومی پرچم لہرا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے وزیراعظم حیدر العبادی نے اتوار کو شام کے ساتھ واقع سرحدی گذرگاہ پر اپنا قومی پرچم لہرا دیا ہے۔اس سرحدی گذرگاہ پر حال ہی میں عراقی سکیورٹی فورسز نے قبضہ کیا ہے اور وہاں سے داعش کے جنگجوؤں کو مار بھگایا ہے۔

عراق کے سرکاری العراقیہ ٹی وی کی اطلاع کے مطابق وزیراعظم حیدر العبادی نے داعش سے آزاد کرائے گئے مغربی قصبے القائم اور حصیبہ بارڈر کراسنگ کا دورہ کیا ہے۔یہ دونوں داعش کے شام اور عراق کے درمیان اہم سپلائی روٹ پر واقع تھے۔

عراقی فورسز نے امریکا کی قیادت میں اتحاد کی فضائی مدد سے گذشتہ ہفتے داعش کے جنگجوؤں کو القائم اور اس کے نواحی علاقوں سے نکال باہر کیا تھا۔ امریکا کی قیادت میں داعش مخالف اتحاد کے عہدے داروں نے اس فتح کو عراق میں داعش کے خلاف روایتی جنگ کا خاتمہ قرار دیا تھا کیونکہ اب عراق میں کوئی قابل ذکر علاقہ داعش کے قبضے میں نہیں رہا ہے ۔تاہم اس کے بچے کھچے جنگجو اب گوریلا حملے جاری رکھ سکتے ہیں ۔وہ شہروں اور قصبوں میں سکیورٹی فورسز یا عام شہریوں پر حملے کرسکتے ہیں۔