.

لبنان: حزب اللہ کے ہمنوا مہمان کو ٹاک شو کے دوران نکال دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنانی وزیراعظم سعد حریری کے مستعفی ہونے سے ملکی افق پر جنم لینے والی افراتفری کے بعد تمام مقامی چینلوں نے مہمانانِ گرامی اور تجزیہ کاروں کے ذریعے اس پیش رفت کے دُور رس اثرات پر روشنی ڈالنا شروع کر دی ہے۔

اس دوران ہفتے کی شام لبنانی چینل "ایم ٹی وی" کے ایک ٹاک شو میں میڈیا پرسن ولید عبود نے پروگرام کے دوران ہی حزب اللہ کے ہمنوا یونیورسٹی پروفیسر حبیب فیاض کو باہر نکال دیا۔

یہ واقعہ پروگرام میں سعودی وزیر مملکت برائے خلیجی امور ثامر السبہان کے ٹیلیفونک بِیپر کے بعد پیش آیا۔ ایسا نظر آیا کہ سعودی وزیر سے بات چیت نے مہمان پروفیسر کو مشتعل کر دیا جس پر انہوں نے بیچ میں مداخلت کر کے بولنا شروع کر دیا۔

ولید عبود نے کوشش کی کہ وہ پروگرام کے نظم و ضبط کو برقرار رکھیں اور انہوں نے پروفیسر فیاض سے درخواست کی کہ وہ ثامر السبہان کو اپنی بات مکمل کرنے کا موقع دیں۔ تاہم فیاض نے سعودی وزیر کی قطع کلامی کا سلسلہ جاری رکھا جس پر عبود لبنانی پروفیسر سے یہ مطالبہ کرنے پر مجبور ہو گئے کہ وہ پروگرام سے چلے جائیں۔

اس مطالبے نے صورت حال کو اور خراب کر دیا اور پروفیسر فیاض نے عبود کے ساتھ بھی بد تہذیبی کا مظاہرہ شروع کر دیا۔ اس کے جواب میں عبود نے پروفیسر فیاض سے پروگرام سے چلے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ "اپنے وقار کا خیال رکھیں ، آپ کسی کا بھی احترام کرنے سے قاصر ہیں"۔