.

عراق: انبار میں داعش کے آخری گڑھ راوہ کا محاصرہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں مشترکہ آپریشنز کی کمان نے ہفتے کی شام اعلان کیا ہے کہ اس کی فورسز نے مغربی صوبے انبار میں داعش تنظیم کے آخری گڑھ راوہ ضلعے کا محاصرہ کر لیا ہے اور اب حملے کے احکامات کی منتظر ہیں۔ اس سے قبل الرمانہ اور اس کے اطراف میں واقع دیہات کو داعش کے قبضے سے واپس لے لیا گیا تھا۔

مشترکہ آپریشنز کی کمان نے اپنے سابقہ بیان میں اعلان کیا تھا کہ الرمانہ اور اس کے اطراف معرکے میں عراقی فوج اور قبائلی افراد نے حصہ لیا۔ علاقے کو چند ہی گھنٹوں میں داعش کی جانب سے کسی قابل ذکر مزاحمت کے بغیر ہی واپس لے لیا گیا۔


عراقی فوج کے ایک سینئر کمانڈر عبدالرشید یار اللہ کے مطابق دیگر آزاد کرائے جانے والے علاقوں میں البوعبید ، البوفراج ، البوشعبان ، الباغوز ، الربط ، البوحردان ، العش ، ختیلہ ، دغیمہ اور عراقی شامی سرحد سے ملنے والی ٹکڑیاں شامل ہیں۔

مبصرین کا کہنا ہے کہ داعش تنظیم کے خاتمے کے اعلان کے لیے مزید وقت درکار ہو گا اس لیے کہ شدت پسند عناصر ابھی تک موصل کے مغرب میں الرمانہ سے البعاج تک کے علاقے میں تقریبا ساٹھ کلومیٹر کھلے رقبے میں متحرک ہیں۔

یہ علاقہ عراق کے کل رقبے کا 4% بنتا ہے۔ سرکاری فورسز کو یہ علاقہ داعش کے قبضے سے واپس لینا ہو گا تا کہ داعش کے خاتمے کا حتمی اعلان کیا جا سکے۔