.

شامی حزبِ اختلاف کا 22 نومبر کو الریاض میں اجلاس طلب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب 22 نومبر کو دارالحکومت الریاض میں شامی حزبِ اختلاف میں شامل مختلف دھڑوں کے ایک اجلاس کی میزبانی کرے گا۔

اس اجلاس کو بلانے کا مقصد شامی حزبِ اختلاف کی صفوں میں اتحاد پیدا کرنا ہے تاکہ وہ شامی حکومت کے ساتھ مستقبل میں اقوام متحدہ کے ایلچی کی نگرانی میں بحران کے لیے امن مذاکرات یا دوسرے فورموں پر بات چیت میں کوئی مشترکہ مؤقف اپنا سکیں ۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کے ایلچی اسٹافن ڈی میستورا کی ثالثی میں جنیوا میں شام امن مذاکرات کے متعدد ادوار ہوچکے ہیں لیکن ان میں شام میں گذشتہ ساڑھے چھے سال سے جنگ کے خاتمے کے لیے کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی تھی۔جنیوا میں مذاکراتی عمل کی ناکامی کے بعد قزاقستان کے دارالحکومت آستانہ میں شامی حکومت اور حزبِ اختلاف کے درمیان روس ، ایران اور ترکی کی ثالثی میں مذاکرات کاایک متوازی ڈول ڈالا گیا تھا۔

آستانہ میں مئی میں منعقدہ مذاکرات میں روس ،ترکی اور ایران کے درمیان شام میں محفوظ علاقوں کے قیام کے لیے ایک سمجھوتا طے پا یاتھا جبکہ شام کی مسلح حزب اختلاف کے وفد نے ان مذاکرات کا بائیکاٹ کردیا تھا۔