.

یمن : سرکاری فوج کا تعز میں تزویراتی ٹھکانوں پر کنٹرول

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں عسکری ذرائع نے اتوار کی سب بتایا ہے کہ سرکاری فوج نے تعز کے مغرب میں موزع گورنری کے شمال اور یختل کے علاقے کے مشرق میں باغی ملیشیا کا ایک حملہ پسپا کر دیا ہے۔

اس سے قبل سرکاری فوج نے تعز کے جنوب مشرق میں واقع گورنری حیفان میں باغیوں کے ٹھکانوں پر حملہ کیا اور جبال شعیب کے علاوہ کئی تزویراتی ٹھکانوں پر کنٹرول حاصل کر لیا۔

یمنی فوج نے اتوار کے روز جنوبی صوبے لحج کی شمال مغربی گورنری طور الباحہ میں متعدد مقامات پر اپنا کنٹرول مستحکم بنا لیا جب کہ حوثی معزول صالح کی باغی ملیشیاؤں نے اپنی ہزیمت کے جواب میں گورنری کے رہائشی دیہات پر اندھادھند گولہ باری کی۔

میدانی ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ عرب اتحاد کے طیاروں اور سعودی فورسز کے توپ خانوں نے متعدد سرحدی علاقوں کے علاوہ نہم کے محاذ اور حجہ اور صعدہ کے صوبوں میں باغی ملیشیاؤں کے ٹھکانوں کو شدید بم باری کا نشانہ بنایا۔

اس دوران جازان کی جانب سعودی سرحد کے نزدیک بڑھنے کی کوشش کرنے والے ملیشیا عناصر کی ٹولیوں کو بھی نشانہ بنایا گیا۔