.

کردوں سے سرحدی علاقے ’تشدد‘ کے بغیر واپس لیں گے: العبادی

’کردستان کی علاحدگی روکنے کے عدالتے فیصلے کا احترام کرتے ہیں‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے وزیراعظم حیدر العبادی نے کہا ہے کہ بغداد حکومت پیش آئند ایام میں ان سرحدی علاقوں کے کنٹرول کے حصول کے لیے اقدامات کرے گی جن پر اس وقت کرد فورسز موجود ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ہم سرحدی علاقوں کا کردوں سے کنٹرول بغیر کسی تشدد کے واپس لیں گے۔

بغداد میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں انہوں نے کہا کہ کسی کشیدگی اور طاقت کے آزمائی کے بغیر ہم سرحدی علاقوں کا کنٹرول کردوں سے واپس لیں گے۔

ادھر منگل کے روز عراقی کردستان کہ حکومت نے ایک بیان میں عراق کی سپیرم کورٹ کے اس فیصلے کو تسلیم کیا ہے جس میں کردستان کی آزادی روکنے کا حکم دیا گیا ہے۔ کرد حکومت کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ کردستان کی علاحدگی روکنے حوالے سے سپریم کورٹ کا فیصلہ قابلہ احترام ہے۔

قبل ازیں عراق کی سپریم کورٹ نے ایک درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے کہا تھا کہ دستور کے تحت عراق کے کسی بھی علاقے کو ملک سے الگ نہیں کیا جا سکتا ہے۔

عدالت کے اس فیصلے پر کرد حکومت کی طرف سے مثبت رد عمل سامنے آیا ہے۔ کرد حکام نے کہا ہے کہ ہمیں یقین ہے کہ عدالتی فیصلہ مرکز اور صوبے میں پائے جانے والے جوہری اختلافات کو ختم کرنے کے لیے جامع مذاکرات کی بنیاد بنے گا۔