.

علی صالح کا حوثیوں کے ساتھ شراکت داری ختم کرنے کا رسمی اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے سابق صدر علی عبداللہ صالح نے اتوار کی شام سرکاری طور پر اعلان کر دیا ہے کہ ان کی جماعت جنرل پیپلز کانگریس پارٹی نے حوثی ملیشیا کے ساتھ شراکت داری مسترد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

صالح نے یمنی فوج ، عوام اور اپنی جماعت کے مراکز کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ یہ فیصلہ حوثی جماعت کی جانب سے مرتکب حماقتوں کے بعد کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حوثیوں کی ذاتی طمع اور ایران کی جانب سے ان کے لیے تیار کردہ ویژن کے سبب "عوام کو بھوکا" اور لاچار بنا دیا۔

صالح کے مطابق یہ فیصلہ یمن کی سرزمین کو اُن منصوبوں سے بچانے کے لیے سامنے آیا ہے جو اُسے فتح کرنے کے واسطے تیار کیے گئے۔

صالح کے مطابق صنعاء میں معرکے کے سلسلے میں "اُلٹی گنتی" کا آغاز قریب ہے۔ انہوں نے فوج اور ریپبلکن گارڈز سے مطالبہ کیا کہ وہ آئندہ گھنٹوں کا انتظار کریں۔