.

القدس سے متعلق ٹرمپ کے اعلان پر سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس طلب

عرب لیگ اور اسلامی ملکوں کی تنظیم کے ہنگامی اجلاس بھی قاہرہ اور استنبول میں ہو رہے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان کے بعد اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس طلب کرلیا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق فرانس، بولیویا، مصر، اٹلی، سینیگال، سویڈن، برطانیہ اور یورو گوائے کی درخواست پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس کل بروز جمعہ کو ہو گا۔ جس میں ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنےکے فیصلے پرغور کیا جائے گا۔

اس حوالے سے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتوینوگوتریز کا کہنا تھا کہ اسرائیل اور فلسطین کے رہنماؤں کوبامقصد مذاکرات اور تنازع کے پرامن حل کےلئے قائل کرنے کے لئے تمام ممکنہ کوششیں کی جا رہی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر کے مستقبل کا فیصلہ اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان براہ راست مذاکرات کے ذریعے ہونا چاہئے وہ آپس میں مل بیٹھیں اور تصفیہ طلب مسائل کے بارے میں کوئی فیصلہ کریں۔

ادھرعرب لیگ نے فلسطین اور اردن کی درخواست پر قاہرہ میں ہنگامی اجلاس ہفتے کے روز طلب کرلیا ہے جبکہ او آئی سی کا ہنگامی سربراہی اجلاس بھی 13 دسمبر کو استنبول میں منعقد کیا جائے گا۔ دونوں بین الاقوامی پلیٹ فارمز میں امریکا کے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے خلاف مشترکہ حکمت عملی پر غور کیا جائے گا۔