.

بیت المقدس کے حوالے سے بین الاقوامی موقف کا احترام کرتے ہیں : موگرینی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یورپی یونین میں خارجہ پالیسی کی ذمّے دار فریڈریکا موگرینی نے اس خیال کا اظہار کیا ہے کہ اسرائیل مشرق وسطی میں دیرپا حل تک پہنچنے کے لیے توجہ دے رہا ہے۔ پیر کے روز اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نتین یاہو کے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں موگرینی نے کہا کہ یورپی یونین بیت المقدس کی پوزیشن کے حوالے سے بین الاقوامی اتفاق رائے کا احترام کرتی ہے۔ اُن کا اشارہ امریکی صدر کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے اعلان کو عالمی برادری کی جانب سے مسترد کر دیے جانے کی طرف تھا۔

موگرینی نے امن عمل میں اردن کے فرماں روا کے لیے اپنی مکمل سپورٹ کا بھی اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ جنوری میں فلسطینی صدر کے ساتھ بات چیت کریں گی۔

اس موقع پر نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ وہ توقع کرتے ہیں کہ یورپی یونین کے زیادہ تر ممالک بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کر لیں گے کیوں کہ اس اقدام کا مقصد امن عمل کو آگے لے جانا ہو گا۔

اسرائیلی وزیراعظم نے باور کرایا کہ بیت المقدس کے بارے میں ٹرمپ کا فیصلہ حقیقت پر مبنی ہے۔